سوات (زمونگ سوات ڈاٹ کام) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیارولی خان نے کہا ہے کہ عمران خان کے الف ب سے ناواقف ہے وہ سیاست کی بجائے ذاتیات پر اُتر آئے ہیں ہمارے حکمران تخت لاہور اور تخت اسلام آبادکے جنگ میں مصروف ہے سی پیک کو ملک کے لئے ترقی کی علامت سمجھتے ہیں لیکن سی پیک پر چھوٹے صوبوں کی بدگمانی دور کرنا اشدضروری ہے اگر ہماری خارجہ پالیسی پر نظر ثانی نہ کی گئی تو ہمار ا انجا م بھی عراق او ر شام جیسا ہوگا ان خیالات کا اظہار اُنہوں نے مٹہ کے علاقہ سمبٹ میں عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا اُنہوں نے کہا کہ وزیر اعظم میاں نوازشریف سی پیک میں کئے گئے وعدوں کو وفاکریں اگر اس بار بھی اُنہوں نے وعدہ خلافی کی تو اُس کے لئے جدہ میں بھی سرچھپانے کی جگہ نہیں ملیگی اُنہوں نے کہا کہ اسلام آباد دھرنے میں ناکامی اوریوٹر ن پرکارکن ا ب عمران خان سے سوروپے چندہ واپس مانگ رہے ہیں خیبر پختونخواہ میں ساڑھے تین سال گزرنے کے باوجود ایک بھی میگا پراجیکٹ شروع نہیں کیا ہے اُنہوں نے کہا کہ اے پی ایس ،کوئٹہ اور مردان کے دھماکوں سے معلوم ہوتا ہے کہ دشمن پختون قوم کے بچوں سے تعلیم کا حق چھیننا چاہتا ہے لیکن دشمن سن لیں کہ وہ کبھی بھی اپنے اس مذموم مقاصدمیں کامیاب نہ ہوسکتااور پختون قوم کی پگڑی ہمیشہ کی طرح اُونچی رہیگی اُنہوں نے کہاکہ اگر پاک بھارت جنگ ہوئی تو پختون قوم اپنے سرزمین کے دفاع میں پیش پیش ہوگی پرآمن افغانستان اور پاکستان ایک دوسرے کے لئے لازم وملزوم ہے دونوں ہمسایوں کو مل بیٹھ کر تمام مسائل افہام وتفہیم سے حل کرنے چاہیئے ہزارہ یونیورسٹی میں پختون طالب العلموں کا قتل عام اور ہاروں بلور پر حملہ خانہ جنگی کو ہوادینے کی کڑی ہے لیکن ہم واضح کردینا چاہتے ہیں کہ پختونوں کو دیوار سے لگانے کاسلسلہ بند نہیں کیا گیا تو ہم بھی اینٹ کا جواب پتھر سے دینا خوب جانتے ہیں ۔




ایک تبصرہ شامل کریں…
0 Likes
1158 مناظر