پشاور: (زمونگ سوات آن لائن نیوز) اے این پی کے رہنماء حاجی عدیل کی رہائش گاہ پر تیسرے روز بھی سیاسی رہنماؤں کی آمد کا سلسلہ جاری رہا۔ چیئرمین سینیٹ رضا ربانی کا کہنا ہے کہ مودی نے بھارت میں نیرو نیشنلزم کی بنیاد پر اقتدار حاصل کیا ہے جبکہ ٹرمپ کی کامیابی کے پیچھے بھی یہی سوچ کارفرما ہے، تنگ نظر بنیاد پرستی کی سیاست امن کیلئے خطرہ ہے۔ ایک سوال کے جواب میں رضا ربانی کا کہنا تھا کہ سربراہان مملکت کی آمد کے موقع پر تمام صوبوں کے وزراء اعلیٰ کی موجودگی وفاقیت کا پیغام دیتی ہے۔
وفاقی وزیر سیفران عبد القادر بلوچ کا کہنا تھا کہ فاٹا اصلاحات کے حوالے سے اہم تجاویز تیار کی ہیں، منظوری کے بعد اگلے سال کے آخر تک فاٹا میں بلدیاتی انتخابات کروائے جائیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ 100 ارب روپے سالانہ کا بجٹ فاٹا کی قسمت بدل دے گا۔
عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفند یار ولی کا کہنا تھا کہ صرف پاناما نہیں ہر طرح کی کرپشن اور قرضے معاف کروانے والوں کا احتساب ہونا چاہئے لیکن اس کا مطالبہ کرنے والے خود ہی آف شور کمپنیوں کے مالک ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی خارجہ اور داخلہ پالیسیاں دونوں ناکام ہو چکی ہیں، وقت آ گیا ہے کہ تمام سیاسی قوتوں کی مشاورت سے اب ان پالیسیوں پر نظر ثانی کی جائے۔
سیاسی رہنماؤں نے اے این پی کے مرحوم سینیٹر حاجی عدیل کی صوبے اور ملکی سیاست میں خدمات کو بھی خراج تحسین پیش کیا۔




ایک تبصرہ شامل کریں…
0 Likes
346 مناظر