سوات (زمونگ سوات ڈاٹ کام)سوات کے علاقے سنگوٹہ میں مبینہ ظلم کا شکارخاندان سوات پریس کلب پہنچ گیا، خاندان کے سربراہ نے انصاف نہ ملنے کی صورت میں بچوں سمیت خودسوزی کرنے کی دھمکی دید ی، عالم زیب ولد منزرے سکنہ سنگوٹہ نے اپنے بچوں کے ہمراہ سوات پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا اور کہاکہ سالہا سال سے سنگوٹہ پبلک سکول کی خدمت کررہے ہیں ، پہلے میرے والد منزرے چوکیدارکے طور پر خدمات انجام دے رہے تھے اور اس کے بعد میں نے خود چوکیداری کے فرائض نبھائے،سوات آپریشن کے دوران نہ صرف اسکول کی عمارت بلکہ سامان کی بھی حفاظت کی اور طالبان حملے کے بعد پولیس اہلکاروں کو بھی اپنے گھر میں پناہ دی ، سخت حالات میں جان پر کھیل کر سکول کی حفاظت کی اوربیٹی اور بیٹے کے ہاتھ پاؤں بھی ٹوٹ گئے لیکن سکول کی حفاظت چھوڑی اور نہ ہی نقل مکانی کی ، انہوں نے کہاکہ حالات بہتر ہوئے تو سکول انتظامیہ نے ضلعی انتظامیہ کیساتھ ملکر ہمیں آباواجداد کے دور سے 40کنال اراضی سمیت ہمیں گھر سے بھی محروم کردیا اور زبردستی بے دخل کرارہمیں سکول کے کوارٹر منتقل کرادیا گیا لیکن اب سکول کی پرنسپل صاحبہ اور انتظامیہ نے اس گھر سے بھی ہمیں بے دخل کرنے کی ٹھان لی ہے اور نوٹس جاری کرکے ہمیں گھر خالی کرنے کا حکم دیا ہے ہم نے سکول پرنسپل سے فریاد کی تو انہوں نے کہا کہ سوات کے لوگ ٹھیک نہیں ہواس لئے تم پر پر مختلف قسم کی آفتیں نازل ہورہی ہیں ، انہوں نے کہا کہ ہم غریب لوگ ہیں اور بڑا خاندان ہے ہمارا کوئی سہارا نہیں اگر ہمیں اس گھر سے زبردستی بے دخل کرنے کی کوشش کی گئی تو میں بچوں سمیت خودسوزی کرنے پر مجبورہوجاؤں گا اور اس کی تمام تر ذمے داری اسکول انتظامیہ اور ضلعی انتظامیہ پر عائدہوگی ۔




ایک تبصرہ شامل کریں…
0 Likes
1885 مناظر