اللہ اکبر کہنے پر سپین کی پولیس نے ایک شخص کو گولیوں سےچھلنی کر دیا




اسلام آباد(زمونگ سوات ڈاٹ کام)سپین کی پولیس نے اللہ اکبر کا نعرہ لگانے والے شخص کو گولیوں سے چھلنی کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق فرانس کی سرحد کے قریب ڈیوٹی پر مامور افسر نے ’اللہ اکبر‘ کا نعرہ بلند ہونے کے بعد فرانسیسی شخص کو مسلح سمجھ کر فائرنگ کیجس کے نتیجے میں وہ جاں بحق ہوگیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق مراکشی شخص ایک خاتون کے ساتھ فرانس کی رجسٹرڈ گاڑی میں سفر کرتے ہوئے ہفتے کی صبح ملک کے شمالی علاقے میں داخل ہونےکی کوشش کررہا تھا۔حکام کا کہنا ہے کہ پیٹرولنگ کے دوران مذکورہ شخص گاڑی میں عجیب و غریب حرکات کررہا تھا پولیس اس مشتبہ عمل کو دیکھتے ہوئے الرٹ ہوگئی تھی۔پولیس نے مقتول کو گاڑی سے باہر نکلنے کا کہا تو وہ ہاتھوں میں کوئی چیز لے کر نکلا اور پولیس موبائل کی طرف بڑھنے لگا۔کاٹالائین پولیس کا کہنا ہے کہ مقتول نے پولیس موبائل کے قریب آتے ہی ’اللہ اکبر کا نعرہ بلند کیا جس کے بعد اہلکار نے اُسے رکنے کا حکم دیا مگر اُس نے نہیں سنا اور پیش قدمی جاری رکھی جس کو دیکھتے ہوئے فائرنگ کی گئی۔پولیس حکام کا کہنا ہے کہ واقعے کی تحقیقات شروع کر دی گئیں ہیں، ابتدائی تفتیش میں یہ بات سامنے آئی کہ مقتول ذہنی مریض تھا۔




ایک تبصرہ شامل کریں…
0 Likes
23 مناظر