میں تقریر میں گالیاں اس لئے دیتا ہوں کیونکہ قرآن میں۔۔ خادم رضوی نے اعتراض اٹھانے والوں کے سامنے دلچسپ توجیہہ پیش کر دی




اسلام آباد(زمونگ سوات ڈاٹ کام)اپنے ایک بیان میں امیر تحریک لبیک یا رسول اللہ علامہ خادم رضوی اپنے پر ہونے والے اس اعتراض کے علامہ دوران تقریر جذباتی ہو کر گالیاں دینے لگتے ہیں کی توجیہہ پیش کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ مجھے پر اعتراض کیا جاتا ہے کہ علامہ جذباتی ہو جاتے ہیںتو اس کی یہ توجیہہ ہے کہ جب ولید بن مغیرہ نے ایک جرم کیا تو اللہ تعالیٰ نے قرآن حکیم میں اس کےدس عیب بیان کئے، تو کیا اب یہ کہا جائے گا کہ رب تعالیٰ بھی نعوذ باللہ جذباتی ہو گئے ہیں۔ کہا جاتا ہے کہ مولانا جذباتی باتیں کرتے ہیں جس پر میں نے یہ کہا کہ جب ولید بن مغیرہ نے ایک جرم کیا تو رب تعالیٰ نے اس کے دس عیب بیان کئے ، اللہ تعالیٰ نے ولید بن مغیرہ کے جرم پر وحی نازل کرتے ہوئے نبی کریمﷺ کی شان بیان کی اور فرمایا کہ ’’میرے حبیبؐ آپ پریشان نہ ہونا، اللہ تعالیٰ نے آپؐ کو خلق عظیم کا مالک بنایا ہے‘‘ اور جب ولید بن مغیرہ کی باری آئی تو اللہ تعالیٰ نے فرمایا کہ یہ شخص تو ذلیل ہے۔ اس موقع پر علامہ خادم رضوی نے اعتراض کرنے والوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ جب ہم ذلیل کہیں تو اعتراض کیا جاتا ہے کہ مولوی صاحب! آپ یہ تقریر کرتے ہیں منبر پر بیٹھ کے، تو میں یہ کہتا ہوں کہ رب تعالیٰ نے قرآن میں ولید بن مغیرہ سے متعلق نبی کریمﷺ کو مخاطب کر کے کہا کہ ’’میرے حبیب آپ پریشان نہ ہو، یہ تو ہے ہی ذلیل‘‘۔ اب جب میں ذلیل کہوں تو کہا جاتا ہے کہ منبروں پر یہ باتیں ہوتی ہیں۔ آیت پڑھتے ہوئے اس کا ترجمہ کرتے ہوئے علامہ خادم رضوی ولید بن مغیرہ سے متعلق رب تعالیٰ کی نبی کریمﷺ کو تسلی کا بتاتے ہوئے کہتے ہیں کہ رب تعالیٰ نے کہا کہ میرے حبیب ؐ یہ تو ہے ہی چغل خور، یہ تو لگائی بجھائی کرتا ہے، یہ تو جھوٹی قسمیں کھاتا ہے، یہ تو بدکردار ہے، اور پھر رب تعالیٰ نے اس سے بھی آگے بات کرتے ہوئے بتایا کہمیرے حبیبؐ اس کی تو اصل میں خطا ہے، یہ اپنے باپ کا تخم ہی نہیں، اور پھر ولید بن مغیرہ سے متعلق رب تعالیٰ نے دسویں بات بیان کرتے ہوئے فرمایا کہ میرے حبیبؐ آپ پریشان نہ ہوں، ہم اسے اس کی ناک سے پکڑ کر گھسیٹیں گے۔ علامہ خادم رضوی نے ایک بار پھر اعتراض کرنے والوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اب یہ اعتراض کرنے والے کیا کہیں گے رب تعالیٰ کے بارےمیں۔علامہ خادم رضوی کا کہنا تھا کہ الحمد سے لے کر والناس تک مجھے پورے قرآن میں کوئی ایک ایسی آیت نہیں ملی جس میں کسی نے رسول کریمﷺ کے بارے میں بات کی ہو اور رب تعالیٰ نے پھر اس کی خبر نہ لی ہو۔ ان لوگوں کو آتی قل ھو اللہ بھی نہیں اور یہ ہمیں بتائیں گے اب کہ حضورؐ کی شان کیسے بیان ہونی ہے۔ انہوں نے اس حوالے سے مزید کیا کہا۔۔ویڈیو ملاحظہ کریں!

ویڈیوز




ایک تبصرہ شامل کریں…
0 Likes
22 مناظر