شرح ٹیکس میں اضافہ ، دھڑادھڑ جرمانے ، ٹرانسپورٹروں نے پہیہ جام ہڑتال کااعلان کردیا




سوات (زمونگ سوات ڈاٹ کام)شرح ٹیکس میں اضافہ ، دھڑادھڑ جرمانے ، ٹرانسپورٹروں نے پہیہ جام ہڑتال کااعلان کردیا، 10دسمبر تک مسئلہ حل کرنے کی ڈیڈ لائن، مسئلہ حل نہ ہونے کی صورت میں 11 دسمبر کو ڈویژن بھرمیں پہیہ جام کااعلان ، شرح ٹیکس مسترد، مینگورہ میں ٹرانسپورٹروں کا احتجاجی مظاہرہ ، شدید نعرہ بازی ، مسئلہ حل کرنے کا پرزورمطالبہ ، تفصیلات کے مطابق شرح ٹیکس میں اضافے اوربرداشت سے باہر جرمانوں کیخلاف ٹرانسپورٹروں نے احتجاجی مظاہرہ کیا، مظاہرین نے انتظامیہ اورٹی ایم اے کے خلاف شدید نعرہ بازی کی ، مینگورہ میں احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے آل سوات ٹرانسپورٹ فیڈریشن کے صدر خائستہ باچہ، شانگلہ ٹرانسپورٹ یونین کے صدر سلطان علی اوردیگرعہدیداروں باچاحسین، میاں محمداقبال ، ضلعی ٹرانسپورٹ کمیٹی کے چیئرمین خادم شاہ، عطاء اللہ خان اور نصری خان نے خطاب کرتے ہوئے خبردارکیاکہ اگر10دسمبر تک شرح ٹیکس واپس نہ کیاگیااوردھڑادھڑ جرمانوں کاروک تھام نہ کیاگیا۔ توہم 11دسمبر کو ڈویژن بھر میں پہیہ جام کردیں گے۔ جس کی تمام ترذمہ داری ضلعی انتظامیہ اورٹی ایم اے پر عائدہوگی ، صدرخائستہ باچا نے کہا ہے کہ ایک سازش کے تحت سوات میں بھی اسلام آباد جیسے حالات پیداکی جارہی ہے ، اوربعض لوگ سوات میں حالات خراب کرنے کے درپے ہیں یہی وجہ ہے کہ صوبے کے دیگر علاقوں کے نسبت سوات میں ٹرانسپورٹ کے شرح ٹیکس میں ناقابل برداشت اضافہ کیاگیا ہے جبکہ ٹریفک پولیس کیطرف سے غیرضروری اوردھڑادھڑ جرمانوں مے بھی رہی سہی کسرپوری کردی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم محب وطن لوگ ہیں ہم نے دھرتی کیلئے قربانیاں دی ہیں لیکن اس کامقصد یہ نہیں کہ ہم پر ظلم کی جائے۔ ہم شرح ٹیکس میں ناقابل برداشت اضافے کو ہرگز نہیں مانتے۔ اگرصوبے کے دیگرعلاقوں میں جو شرح مقررہے اگر اس کے مطابق معمولی اضافہ کردیاجائے تو ہم وہ بھی مانتے ہیں لیکن بے تحاشہ اضافہ ہرگز قابل قبول نہیں۔ ہمیں دیوارکیساتھ لگانے کاطرز عمل ترک کیاجائے۔ اگر 10دسمبرتک مسئلہ حل نہ کیاگیاتو گیارہ دسمبر کو پہیہ جام کردیں گے جس کی تمام ترذمہ داری ضلعی انتظامیہ اورٹی ایم اے مینگورہ پر عائد ہوگی ۔




ایک تبصرہ شامل کریں…
0 Likes
23 مناظر