تعلیمی اداروں کی سیکورٹی بہتر بنانے کے لئے ضلعی پولیس سربراہ کی دفتر میں اہم اجلاس




سوات (زمونگ سوات ڈاٹ کام ) خیبر پختونخواہ میں تعلیمی اداروں پر حالیہ دہشت گردی کے واقعات کے پیش نظر سوات میں تعلیمی اداروں کی سیکورٹی بہتر بنانے کے لئے ضلعی پولیس سربراہ سوات کے دفتر میں اہم اجلاس۔، تفصیلات کے مطابق ضلعی پولیس سربراہ کے دفتر میں تعلیمی اداروں کے سیکورٹی بہتر بنانے کے حوالے سے ایک اجلاس منعقد کیا گیا ،جس میں ضلعی ایجوکیشن آفیسر (مردانہ ) نواب علی ، اسسٹنٹ کمشنر بابوزئی جناب حامد علی ، ADEO پی اینڈ ڈی (مردانہ ) جناب اعظم، ADEOسپورٹس (مردانہ ) جناب شفیق الرحمان، ADEOپی اینڈ ڈی (زنانہ) جناب عبد العزیز شاہین ، ایڈیشنل SPلوئر سوات خانخیل خان نے شرکت کی اجلاس کی صدارت ضلعی پولیس سربراہ سوات کیپٹن(ر) واحد محمود (PSP) نے کی اجلاس کے صدرات کرتے ہوئے ضلعی پولیس آفیسر کیپٹن (ر) واحد محمود نے خطاب کرتے ہوئے تعلیمی اداروں کو سیکورٹی کے لاحق خطرات سے آگاہ کیااور سیکورٹی بہتر بنانے کے ہدایات بھی دی ۔ضلعی پولیس آفیسر نے کہا کہ تمام تعلیمی اداروں کو اپنی سیکورٹی بہتر بنانے کے لے تربیت یافتہ سیکورٹی گارڈز اور سیکورٹی انچارج رکھنا ہوگا ، بہتر ہوگا کہ آرمی سے ریٹائرڈ ہو ۔ہر سکول میں ایک داخلی اورخارجی دروازہ ہوگا جس پر سکول عملے کاایک فرد کھڑا رہے گا تاکہ وہ کسی بھی اجنبی شخص کی پہچان کرسکے۔ہر سکول کے دیواروں پر خاردارتاریں لگائی جائینگی تا کہ کوئی بھی شخص آسانی سے دیوار نہ پھلانگ سکے ۔ہر سکول میں سیکیورٹی کیمرے نصب کئے جائینگے اور کیمروں کی باقاعدگی سے مانیٹرنگ کی جائیگی۔سکول کے عملے اور طلباء کوکارڈزجاری کئے جائینگے تا کہ سکول طلباء اور سکول عملے کی پہچان ہوسکے۔سکول کے احاطے میں کسی بھی اجنبی شخص کو ٹیلہ وغیرہ لگانے کی اجازت نہیں دی جائیگی۔سکول استقبالیہ میں ہر آنے والےvisitorکی شناختی کارڈچیک کی جائیگی اور ان کے نام اور شناختی کارڈنمبر زرجسٹر میں درج کئے جائینگے۔ہر سکول میں کسی بھی ممکنہ خطرے سے نمٹنے کیلئے مشقیں بھی کرائی جائیگی۔ہر سکول کے ٹرانسپورٹ گاڑی میں کسی بھی اجنبی شخص کو سوار کرنے کی اجازت نہیں ہوگی اور ہر سکول ٹرانسپورٹ گاڑی کے ڈرائیور یا ہیلپر کے ساتھ اسلحہ لازمی ہوناچاہیے۔پولیس انسپیکشن ٹیم وقتافوقتاتعلیمی اداروں کا دورہ اور معائنہ کریگی اور ناقص سیکیورٹی انتظامات کرنے والے سکولوں کے خلاف قانونی کاروائی کی جائیگی۔اجلاس کے آخر میں ضلعی پولیس سربراہ سوات نے کہا کہ ہر سکو ل کے سیکیو رٹی گارڈز کو پولیس کی طرف سےweapon handling اور Firing کی فری تربیت دی جائیگی اور ان کو کسی بھی حملے کے روک تھام اور جواب کے لئے تیار کیا جائیگا۔




ایک تبصرہ شامل کریں…
0 Likes
26 مناظر