بریکوٹ پولیس کے تشدد سے مزدور کی آنکھ ضائع ہوگئی




سوات( زمونگ سوات ڈاٹ کام)بریکوٹ پولیس چوکی انچارج نے بلا وجہ وحشیانہ،نصاف دلایا جائے،فرمان علی نے فریاد کرتے ہوئے کہا کہ میں ایک غریب مزدور ہوں پولیس چوکی انچارج نے مجھ پر بلا وجہ وحشیانہ تشدد کرکے میری ایک انکھ ضائع کردی،انہوں نے کہا کہ میرے چار گھونگھے چھوٹے بچے ہیں اس کیلئے روزی روٹی کما رہا ہوں پولیس نے مجھ پر بے جا الزامات لگاکر تشدد کیا ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا انہوں نے کہا کہ بریکوٹ میں گزشتہ روز مبینہ طور پر چوری ہوئی تھی جس میں بریکوٹ چوکی کے انچارج نے مجھ بے جا الزام لگاکر گرفتار کرلیا، چوکی لے جا کر چوری قبول کرنے کا دباؤ ڈالا چونکہ چوری میں نے نہیں کی اور نہ ہی مجھے چور کا پتہ ہے لیکن مجھے باربار کہا جارہاتھا کہ چوری قبول کرو یا چور کا نام بتاؤ، خدا گواہ ہے کہ مجھے چوری کا کوئی پتہ نہیں میں غریب مزدور ہوں اوربازار میں گزشتہ چالیس سال سے محنت مزدوری کرہا ہوں مگر بریکوٹ چوکی انچارج نے میری کوئی منت سماجت نہیں مانی اور مجھ پر وحشیانہ تشدد کیا ،انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر کے پاس گیا تو انہوں نے 50ہزار روپے کے اپریشن کا کہا ہے میں غریب ہوں اعلی حکام میرے اس مسلے پر غور کریں اور مجھے انصاف دلائیں،



ایک تبصرہ شامل کریں…
0 Likes
28 مناظر