فاٹا چیمبر کے رہنماؤں کی وزیر قانون اور ایف بی آر حکام سے ملاقات




سوات (زمونگ سوات ڈاٹ کام) ملاکنڈ ڈویژن کی خصوصی حیثیت کے خاتمے کے حوالے سے فاٹا چیمبر کے رہنماؤں کی وزیر قانون اور ایف بی آر حکام سے ملاقات ، ملاکنڈ ڈویژن کی خصوصی حیثیت کی بحالی کیلئے خصوصی آرڈی نینس لانے کا فیصلہ ، ملاکنڈ ڈویژن کے عوام کو ہر ممکن سہولیات دی جائے گی گزشتہ روز پاک سیکرٹریٹ اسلام آباد میں فاٹا چیمبر آف کامرس اور ملاکنڈ ڈویژن کے عمائدین جس کی قیادت فاٹا چیمبر کے صدر قیصر خان اور سوات ٹریڈرز فیڈریشن کے صدر عبدالرحیم نے کی اس موقع پر سنیٹر فدا محمد خان ، سنیٹر ستارہ آیاز ، سنیٹر خانزادہ خان ، انڈسٹری مالکان عزیز خان ، سمن جان خان ، افتخار خان ، اکبر خان ، شعیب خان ، سلیم خان اور دیگر موجود تھے اس موقع پر صدر قیصر خان اور عبدالرحیم نے فاٹا اور ملاکنڈ دویژن کے عوام کے مشکلات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن کے عوام نے جو بد ترین ادوار دیکھے ہیں شاید پوری دُنیا میں کسی نے دیکھے ہو سیلاب ، دہشت گردی ، اور زلزلوں نے یہاں کے عوام کی معاشی زندگی تباہ کر دی ہے اور اس امن کیلئے یہاں کے تین ہزار عوام ، 550 سیکورٹی اور 250 پولیس اہلکاروں نے قربانیاں دی ہیں اور عوام بد ترین دور سے گزرے ہیں انہوں نے کہا کہ ہم فاٹا میں ایف سی آر کے خاتمے کی حمایت کرتے ہیں لیکن ملاکنڈ ڈویژن کی خصوصی حیثیت کے خاتمے کسی بھی صورت تیار نہیں اور ڈویژن بھر کے تاجر برادری ، سیاسی جماعتیں ، وکلاء اور سول سوسائٹی ملاکنڈ ڈویژن کے خصوصی حیثیت کے خاتمے کیخلاف ایک صف پر متحد ہے اس موقع پر وزیر قانون علی ظفر نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن کے عوام نے ملکی بقاء کی جنگ میں بے پناہ قربانیاں دی ہے اور ان قربانیوں کے بدولت ان سے مراعات چھیننے نہیں بلکہ دئیے جائیں گے انہوں نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن کے عوام کیلئے ڈومیسٹک صارفین کو 5 سال کی ریلیف دی گئی ہے کمرشل صارفین کو بھی دی جائے گی اور ایک خصوصی آرڈی نینس کے ذریعے ملاکنڈ ڈویژن کی خصوصی حیثیت کی بحالی کی کوششیں کرینگے اور ملاکنڈ ڈویژن کے عوام کے مشکلات کا ازالہ کیا جائے گا اس موقع پر سوات ٹریڈرز فیڈریشن کے صدر عبدالرحیم نے وزیر قانون ، سیکرٹری قانون اور ایف بی آر حکام کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ہم یقین رکھتے ہیں کہ آپ لوگ ملاکنڈ ڈویژن کی خصوصی حیثیت کی بحالی کیلئے اپنا کردار ادا کرینگے ۔




ایک تبصرہ شامل کریں…
0 Likes
56 مناظر