عوام افواہوں پر کان دھرنے کی بجائے پولیس فورس سے تعاؤن کریں، ڈی پی او سوات




سوات( زمونگ سوات ڈاٹ کام)سوات میں امن برقرار رکھنا پولیس فورس کی ذمہ داری ہے ، مختلف علاقوں میں لوگوں کی گھروں میں پتھر پھینکنے کے واقعات کا نوٹس لے کر متاثرہ علاقوں میں 125 پولیس اہلکارو ڈی ایس پیز اور ایس پی پر مشتمل20 ٹیمیں مقرر کرکے حالات کا خود جائزہ لے رہاہوں ،عوام افواہوں پر کان دھرنے کی بجائے پولیس فورس سے تعاؤن کریں، واقعات مقامی شرپسندوں کی کارستانی ہے جس پر جلد قابو پالیں گے ، ان خیالات کااظہار ڈی پی او سوات سید اشفاق انور نے اپنے دفتر میں میڈیا کے نمائندوں کو سوات میں امن وامان کے حوالے سے خصوصی بریفنگ دیتے ہوئے کیا ، انہوں نے کہا کہ ہماری اولین ترجیح سوات میں بڑی قربانیوں کے بعد قائم ہونے والے امن کو برقرار رکھنا ہے، سوات میں سودی لین دین کرنے والے افراد کے خلاف کارروائی بھی جاری ہے کیونکہ اس قبیح کاروبار کی وجہ سے لوگوں کے گھر برباد ہورہے تھے، 18 افراد کی لسٹ بنا کرکارروائی کے دوران 10 سود خوروں کو گرفتا ر کرکے ان کے خلاف مقدمات دائر کئے گئے ہیں ، اس کے علاوہ تھانوں میں آنے والے سائلین کی بہتر خدمت کے لئے تمام ایس ایچ اوز کو سائلین کی خدمت کا پابند بنا کر ہدایت کی گئی ہے کہ وہ لوگوں کی خدمت کے لئے تھانوں میں اپنی موجودگی کو ہر حال میں یقینی بنائیں ، ڈی پی او سوات نے اس ضمن میں میڈیاکے نمائندوں سے درخواست کی کہ وہ اپنے اپنے علاقوں میں تھانوں کی کارکردگی پر نظر رکھتے ہوئے کسی بھی خرابی کی بروقت نشان دہی کرائیں تاکہ اس کا سدباب کیا جاسکے ۔لوگوں کی گھروں میں پتھر پھینکنے اور تشویش کے بارے میں انہوں نے کہا کہ ہر سال اگست کے مہینے میں سوات کا سیاحتی سیزن خراب کرنے کیلئے مخصوص عناصر اس طرح کے ہتھکنڈے استعمال کرتے ہیں، امسال بھی منگلور چارباغ، شموزئی اور مٹہ میں شکایات پر فوری نوٹس لے کر اور کھلی کچہریوں کے ذریعے مقامی لوگوں اورعمائدین کے تعاؤن سے کافی حد تک قابو پالیا ہے تاہم تحصیل مٹہ کے علاقوں بیدرہ ،درشخیلہ اور دیگر ملحقہ علاقوں میں شکایات پر مختلف علاقوں کے125 ایس ایچ اوز ،دو ڈی ایس پی اور ایس پی پر مشتمل20 خصوصی ٹیمیں بنائی ہیں جو میری نگرانی میں کام کررہی ہیں بہت جلد عوام کو اس حوالے سے اچھی خبر سنائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ سوات میں امن قائم رکھنا اداروں کے ساتھ ساتھ عوام کی بھی ذمہ داری ہے لہذا معاشرے کا ہر فرد اپنے ارگرد نظر رکھتے ہوئے کسی بھی انہونی کے بارے میں فوری طورپر پولیس کو نشان دہی کریں تاکہ اس کا بروقت سدبا ب کیا جاسکے۔




ایک تبصرہ شامل کریں…
0 Likes
193 مناظر