سعودی عرب میں بچوں کیلئے بھی پاسپورٹ لازمی قرار،کتنی عمر کے بچوں کو قرینہ اور فنگرپرنٹس ریکارڈ کروانے کا حکم جاری کردیا گیا؟ نئے قوانین کی تفصیلات سامنے آگئیں




جدہ(زمونگ سوات ڈاٹ کام) سعودی عرب کے محکمہ پاسپورٹ نے اعلان کیا ہے کہ چھ برس اور اس سے زائد عمر کے کسی بھی بچے کے اقامے میں اْس وقت تک تجدید نہیں کی جائے گی جب تک اْس کے فنگر پرنٹس اور آنکھوں کی پْتلی کا ریکارڈ جمع نہ ہو گااور ایسے کسے بچے کا سکول میں داخلہ ہو گا نہ وہ بیرونِ ملک سفر کر سکے گا جس نے قرنیہ اور فنگر پرنٹس ریکارڈ نہ کروائے ہوں۔فیملی کے ہر فرد کے لیے مستقل پاسپورٹ بھی ضروری ہو گا۔ اگر کسی بچے کا پاسپورٹ نہیں بنا ہو گا تو وہ سفر نہیں کر سکے گا۔ محکمہ پاسپورٹ کے ڈائریکٹر میجر جنرل سعد الخالدی نے مذکورہ اطلاع دیتے ہوئے مملکت میں مقیم تارکین وطن کو تاکید کی ہے کہ وہ جتنی جلدی ہو سکے اپنے چھ سال او راس سے زائد عمر بچوں کے فنگر پرنٹس ریکارڈ کر والیں اس کے علاوہ آنکھوں کی پتلی کے ریکارڈ کا بھی اندراج کروا لیں۔فیملی کا کوئی بھی ممبر پاسپور ٹ کے بغیر سفر کرنے کا مجاز نہیں ہوگا۔




ایک تبصرہ شامل کریں…
0 Likes
75 مناظر