شانگلہ کی تحصیل چکیسر منشیات کا گڑھ بن گیاہے ، چند ہفتوں میں 6افراد نے خودکشی بھی کر لی




سوات (زمونگ سوات ڈاٹ کام) شانگلہ کی تحصیل چکیسر منشیات کا گڑھ بن گیاہے ، منشیات کے عادی افراد میں ہرگزرتے دن کے ساتھ تشویشناک حد تک اضافہ ہو رہا ہے ، منشیات کی وجہ سے گذشتہ چند ہفتوں میں چھ افراد نے خود کشی بھی کرلی ہے ، بڑھتے ہوئے منشیات کی وجہ سے عنقریب تحصیل چکیسر کے نمائندہ عمائدین کا وفد آر پی او ملاکنڈ سے ملاقات کرے گا، تفصیلات کے مطابق ضلع شانگلہ کی تحصیل چکیسر میں ہر قسم کی منشیات کا کاروبار عروج پر ہے ، پورے ملاکنڈ ڈویژن میں اگر کسی منشیات کی عادی یا منشیات فروش کو منشیات نہیں ملتی تو خود ساختہ قبائلی علاقہ چکیسر کا رخ کرتا ہے ، چکیسر ایسا منظر پیش کررہاہے جیسے یہ حکومتی عملداری میں نہ ہو ، منشیات کی خرید و فروخت کھلے عام جا ری ہے ، ہر چھوٹا بڑا چرس کا عادی بن چکا ہے ، ذرائع کے مطابق گذشتہ چند ہفتوں کے دوران چھ نو جوانوں نے خود کشی بھی کرلی ہے ، چکیسر میں بڑھتی ہوئی منشیات فروشی کے خلاف عمائدین علاقہ کا ایک نمائندہ وفد بھی عنقریب آر پی او ملاکنڈ سے ملاقات کرکے انہیں علاقے کی صورت حال سے آگاہ کرے گا کہ وہاں پر اداروں کی عمل داری کمزور ہونے کی بناء پر نوجوان نسل منشیات کے ہاتھوں برباد ہورہی ہے اور قوم کے مستقبل سے کھیلا جارہاہے ،ذرائع کا کہنا ہے کہ چکیسر میں تعینات پولیس مکمل طور ناکام ہوچکی ہے اور سازش کے ذریعے چکیسر کے نوجوانوں کو منشیات کا عادی بنا رہا ہے۔




ایک تبصرہ شامل کریں…
0 Likes
111 مناظر