وزیراعظم ہاؤس کو ٹیکنالوجی یونیورسٹی قرار دینے کی تجویز




اسلام آباد (زمونگ سوات ڈاٹ کام) وزیراعظم عمران خان نے قوم سے خطاب میں وزیراعظم ہاؤس کو یونیورسٹی بنانے کا اعلان کیا تھا۔ وزیراعظم ہاؤس کو ٹیکنالوجییونیورسٹی قرار دینے کی تجویز دی گئی ہے۔ نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق کامسیٹس یونیورسٹی اسلام آباد کے ریکٹر ڈاکٹر راحیل قمر نے کہا ہے کہ میری ذاتی رائے ہے کہ وزیر اعظم ہاؤس میں مستقبل کی ٹیکنالوجی کی تدریسی جامعہ قائم کی جائے۔جامعات کی معاونت سے حکومت اگلے 5 سال میں ایک کروڑ ملازمتوں کی فراہمی کا وعدہ پورا کر سکتی ہے۔ یا دہےپاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین اور وزیراعظم عمران خان نے قوم سے پہلے خطاب میں کہا تھا کہ وزیراعظم ہاؤس میں نہیں رہوں گا، ملٹری سیکرٹری کے تین بیڈروم کے گھر میں رہوں گا، دو گاڑیاں اوردوملازم رکھوں گا،بنی گالہ میں رہنا تھا سکیورٹی ایجنسیز نے کہا کہ جان کوخطرہ ہے،مہنگی گاڑیاں نیلام کرکے پیسا قومی خزانے میں جمع کراؤں گا، وزراء اعلیٰ، گورنرزہاؤسزکے خرچے کم، جبکہ وزیراعظم ہاؤس کویونیورسٹی بنائیں گے،خرچے کم کرنے کیلئے ٹاسک فورس قائم کریں گے۔
انہوں نے وزارت عظمیٰ کا قلمدان سنبھالنے کے بعد قوم سے اپنے پہلے خطاب میں کہا کہ سب سے کارکنان کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔ جو 22 سال قبل میرے ساتھ اس تحریک میں شامل ہوئے تھے۔آج احسن رشید اورسلونی بخاری ہمارے ساتھ چلی تھیں وہ آج نہیں ہیں۔ میں تمام کارکنان کاشکریہ ادا کرتا ہوں۔ لوگ ان کا مذاق اڑاتے تھے کہ کس تانگہ پارٹی کے ساتھ آپ ہیں۔ دوسرے میرے رول ماڈل قائداعظم نے ایک مشن کیلئے سیاست کی۔وزیراعظم نے مزید کہا تھا کہ ،․وزراء اعلیٰ ہاؤس ، گورنرہاؤسز میں خرچے کم کریں گے۔ گورنر ہاؤسز میں کوئی ہمارا گورنر نہیں رہے گا۔اس لیے ہم نے کمیٹی بنائی ہے۔ وزیراعظم ہاؤس میں اعلیٰ قسم کی یونیورسٹی بنائیں گے۔ جہاں لیبارٹریاں ہوں گی۔ایک ہم ٹاسک فورس بنائیں گے جس کا کام خرچے کم کرنا ہوگا۔



ایک تبصرہ شامل کریں…
0 Likes
120 مناظر