کبل قلاگے میں گھنے جنگلات کے وسط میں مشہور مقام “قطاروں گٹ”خصو صی توجہ کا منتظر




کبل (زمونگ سوات ڈاٹ کام ) تحصیل کبل کے علا قہ قلا گے میں گھنے جنگلا ت کے وسط میں موجود سیروتفریح کے حوالے مشہور مقام “قطاروں گٹ”خصو صی توجہ کا منتظر ، اس علا قے تک جانے کے لئے نہ صرف روڈ کا انتہائی خراب مسئلہ درپیش ہے جبکہ بجلی کے سنگین مسئلے نے اس علا قے کو جدید دور میں بہت پیچھے دھکیل دیا ہے ، اس علا قے کو تفریح پر جانے کے لئے تقریباً 8کلومیٹر روڈ انتہائی خستہ حا ل ہے جس پر ما ضی میں کئی حا دثا ت کے دوران متعدد افراد جان کی با زی ہا ر چکی ہے ، شہری علا قوں کے نسبت یہ پہا ڑی علا قے زیا دہ توجہ اور ترقی کی مستحق ہے تفصیلا ت کے مطا بق ضلع سوا ت کی تحصیل کبل میں واقع دور دراز پہا ڑی علا قہ جو مر کزی مقام کبل سے تقریباً 15کلو میڑکے فا صلے پر واقع خوبصورت علا قہ قلا گے کے مختلف مقامات کھنڈروں ، کلا لے، انظرئے جسکی آبا دی تقریباً پہاڑوں کے دامن میں موجود 700نفوس پر مشتمل ہے پہا ڑوں کے دامن میں اس جدید دور میں ہر قسم کی سہولیات سے نہ صرف محروم ہے بلکہ ان علا قوں کی مین روڈ پر موجود سیروتفریح کے حوالے مشہور مقام قطاروں گٹ تک جانے کے لئے انتہا ئی دشوار گزار راستے کو استعمال میں لا نا پڑتا ہے مذکورہ علا قوں کھنڈروں کلا لے اور انظرئے موجودہ دور میں بجلی پانی اور تعلیم جیسے بنیادی ضروریات کے لئے ترس رہے ہیں اس علا قے کو ما ضی میں حکمرانوں نے 14سال قبل بجلی کی خا لی کھمبے لگا رکھی ہے اور تقریباً 15تک لگے بجلی کے کھمبے لائینوں سے محروم ہے اسی طرح علا قے میں سکول کے بچے تعلیم سے بھی زیادہ محروم ہو تے ہیں کیونکہ زیا دہ تر طالبات مڈل سکول منجہ تک جا تے ہیں جو ان علا قوں سے 8اور10کلومیٹر کے فاصلے پر موجود ہے یہی وجہ ہے کہ علا قے میں گرلز مڈل سکول کی تعمیر لا زمی امر ہے کیونکہ موجودہ حکومت نے تعلیم اور صحت کے حوالے خصو صی اقدامات کا جو تہیہ کر رکھا ہے اس پر پورا اُترنا ہو گا مذکورہ علاقوں کے لئے موجود پرائمری سکول بھی اس جدید دور میں بنیادی سہولیات سے محروم ہے اور علا قے کے بچے کئی کلو میٹر کا پیدل سفر طے کر کے سکول جا تے ہیں جبکہ سہولیات کی عدم موجودگی سے علاقے کے سینکڑوں بچوں کا مستقبل تعلیم کے حوالے تاریک نظر آرہا ہے علا قے کے عوام کے مہمان نوا زی ، جفا کشی میں اپنی مثال آپ ہے لیکن افسوس نا ک امر یہ ہے کہ ان علا قوں پر ما ضی میں حکمرانوں نے کوئی خا ص توجہ نہیں دی یہی وجہ ہے کہ مذکورہ علا قے آج کل ہر بنیادی سہولت سے محروم ہے موجودہ بلدیاتی نظام بھی ان علا قوں کے لئے خا ص سود مند ثابت نہ ہو سکی ۔ اس لئے ان علا قوں کے عوام اس دفعہ یہ اُمید لگا کر بیٹھے ہے کہ منتخب وزیر اعظم عمران خان جو آج سے کوئی 20سال قبل خو د ان علا قوں کا دورہ کر چکے ہیں پسماندگی کے شکار ان علا قوں پر خصو صی توجہ دینگے اور ان علا قوں کو جو بجلی منصوبوں، تعلیم ، صحت اور پانی کے علا وہ ، روڈ سیکٹرز جیسے اہم ضرورت پر خصو صی توجہ دینگے جس سے نہ صرف علاقے کی محرومی دور ہو جائیگی بلکہ یہ علا قہ سیر و تفریح کے حوالے بھی آنے والے مقامی سیا حوں کے لئے خصو صی توجہ کا مرکز بنے گاان علا قوں کی خاص اہمیت یہ ہے کہ یہاں نہ صرف آنے والے سیاح گنے جنگلا ت ، یخ بستہ چشموں اور پیک نیک کی تقریبات سے لطف اندو ز ہونگے بلکہ یہاں پہا ڑوں میں موجود مختلف قسم کی جڑی بو ٹیوں کی قدرتی طور ذائقہ دار پانی استعمال میں لا کر انسا ن کے اندر موجود مختلف قسم کی امراض سے شفاء یاب بھی ہونگے یہاں کے عوام نے موجودہ حکومت کے منتخب ممبران وزیر مملکت مراد سعید، حلقہPK-6کے صوبائی وزیر معدنیات ڈاکٹر امجد کے علا وہ PK-7سے ضمنی الیکشن میں کامیاب ہونے والے ممبر سے مستقبل میں یہ اُمید لگائی ہے کہ وہ ان علا قوں پر شہری علا قوں سے زیادہ توجہ دینگے تا کہ ما ضی میں حکمرانوں سے نظر اندازان علا قوں کے مسائل شہری علا قوں کے برابر آ سکے۔




ایک تبصرہ شامل کریں…
0 Likes
63 مناظر